Europe don't aware about Terrorist Group
American Europe

Europe don’t aware about Terrorist Group.

امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ امریکہ اور یورپی ممالک کے پاس اندرونی دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے کوئی سسٹم نہیں ہے. ان کو یہی نہیں پتہ چلتا کہ کون سا باشندہ کیا کام کر رہا ہے اور کیا نہیں. مسلم ممالک پر تہمت لگانے والا امریکہ کو اپنے ہی ملک میں رہنے والے دہشت گرد ی کا نیٹ ورک کی خبر نہیں ہے.

قومی اخبار کے مطابق امریکہ دہشتگردی کے متعلق رپورٹ رکھنے سے قاصر ہے. امریکی ماہرین نے بتایا ہے کہ نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں ہونے والی دہشت گردی نے یہ راز فاش کر دیا ہے. کہ امریکہ اور پورپ کے کسی بھی ممالک میں یہ اندرونی امور میں دہشتگردی کا سراغ لگانے کا کوئی سسٹم موجود نہیں ہے. نیوزی لینڈ میں ہولناک دہشت گردی سے 10 منٹ پہلے وزیراعظم اور وزیراء کو کو اپنی کاروائی سے آگاٰہ کرنے کے لیے خطوط لکھے. لیکن نیٹ ورک نہ ہونے کی وجہ سے اس خط پر بروقت کاروائی نہیں ہو سکی.

امریکی فوج ملا عمر کو پکڑنے میں‌ناکام

اسی طرح امریکہ میں بھی کچھ نہیں پتہ کے کون سا باشندہ کیا کرنے والا ہے. اس بارے میں بروقت آگاہی کا کوئی نظام موجود ہی نہیں ہے. یورپی ممالک میں ایسے نظام بنائے کہ پتہ لگ سکے کہ شہر کی کیا صورتحال ہے. اگر کوئی بھی شخص مشکوک دکھائی دے تو فورا اس کی واردات کو روکا جائے.

ترجمان دفتر خارجہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر نیوزی لینڈ میں مساجد پر ہونے والی دہشت گردی میں شہید 9 پاکستانی افراد کی تصدیق کر دی ہے. اس کے علاوہ 1 پاکستانی تشویشناک حالت میں ہسپتال میں ہے .

Europe don’t aware about Terrorist Group and American too. Analyst says America and Europe don’t have any defending network to tackle terrorism internally.

LEAVE A REPLY

Connect with: